LOADING

Type to search

\6۔ کیا اللہ مجبور ہے؟

உருது விளக்கங்கள்

\6۔ کیا اللہ مجبور ہے؟

Share

\6۔ کیا اللہ مجبور ہے؟

ان آیتوں کو 2:15، 2:88، 2:89، 2:152، 2:158، 2:159، 2:161، 3:87، 4:46، 4:47، 4:52، 4:93، 4:118، 4:147، 5:13، 5:60، 7:44، 9:68، 9:79، 11:18،24:7، 33:57، 33:64، 38:78، 47:23، 48:6، 64:17، 76:22سطحی طور پر دیکھا جائے تو بعض لوگ سمجھیں گے کہ اس میں اللہ کی کمزوری دکھائی دیتی ہے۔ 

اللہ بے حد قدرتوں والا ہے۔اگر کوئی کام کر نا ہوتو صرف ’کن‘ کہنے سے وہ ہوجاتا ہے۔

لیکن ’’اللہ تدبیر کرتا ہے، اللہ مذاق اڑاتا ہے، اللہ دھوکہ دیتا ہے ‘‘ جیسے جملے ان آیتوں میں دکھائی دیتا ہے۔ 

دھوکہ دینا، مذاق اڑانا وغیرہ ناتواں کمزوروں کا کام ہے۔ ہوجا کہہ کر پیدا کرنے کی قدرت رکھنے والا تدبیر اور دھوکہ بازی کرنے کی ضرورت نہیں۔ اس لئے بعض لوگ سوچ سکتے ہیں کہ اللہ نے ایسا کیوں کہا۔

اکثر زبانوں میں ایسے جملوں کے معانی براہ راست لینے کے بجائے اس کو دوسرے معنوں میں بھی استعمال کیا جا تاہے۔ 

مثال کے طور پرجب ہم کہتے ہیں کہ ’’اگر تم حدسے گزروگے تو میں بھی حد سے گزروں گا‘‘ تو پہلے کی حد سے گزرنا ہی براہ راست کے معانی میں استعمال ہوا ہے۔ دوسرا جو حد سے گزرنا ہے وہ جوابی کاروائی کے معانی میں ہی استعمال کیا گیا ہے۔ اگر کوئی ہمارے خلاف حد سے گزرتا ہے تو اس کو جواب دیناحد سے گزرنا نہیں ہوگا۔ 

’’اگروہ مذاق اڑائیں گے تو اللہ بھی مذاق اڑائے گا‘‘کو ’’مذاق اڑانے کا سزا دے گا‘‘کے معانی میں اور ’’اگر وہ تدبیر کر یں گے تو اللہ بھی تدبیر کر ے گا‘‘ کو ان کی ’’تدبیر کو ناکام کر ے گا‘‘ کے معانی میں استعمال کیا گیا ہے۔ 

’’تم کروگے تو میں بھی کروں گا‘‘کے انداز میں کہی ہوئی اللہ کی قدرت کے خلاف تمام جملوں کو اسی پیرائے میں سمجھ لینا چاہئے۔ تاکیدی انداز کے بجائے تعریفی انداز میں بھی ایسے جملے استعمال کئے گئے ہیں۔ 

اللہ کا فرمان ہے کہ ’’مجھے تم یاد کروگے تو میں بھی تمہیں یاد کروں گا‘‘،’’ تم شکر کرو گے تو میں بھی شکرکروں گا‘‘ ۔ اللہ ہمیں یاد کرنے کی ضرورت نہیں اور ہمیں شکر کر نیکی بھی ضرورت نہیں۔ ایسے جملوں کو ہم اس طرح سمجھ لینا چاہئے کہ وہ اس کا اجر دے گا۔ ’’اللہ لعنت کرتا ہے‘‘ کو ہم ’’وہ سزا دیتا ہے‘‘ سمجھنا چاہئے۔